(ضبط کی حد سے گذر جائیں تو سچ بولتے ہیں (غزل

By | September 1, 2011
You are visitor No:

ضبط کی حد سے گذر جائیں تو سچ بولتے ہیں

6 thoughts on “(ضبط کی حد سے گذر جائیں تو سچ بولتے ہیں (غزل

  1. uzma

    hahahahaha!!!! sach bolney se kaafi problems solve ho jaatey hein …. 🙂

  2. Awais Ch

    Tamaam Shehar men jhoot ka raaj tha………!!!

Comments are closed.